|August 17, 2019
NEWS
تعمیر بیت ہمیں سلام ہسپتال تکمیل کے آخری مراحل میں ہے
حدیث حفظ مقابلہ جلد ہی آنے والے
جلد ہی طالب علم رائے ویک میں شرکت کرنے والے ہىں

سہولیات

مسجد:

یہ مسجد ،مدرسہ اور علاقے کی ضرورت کو مدِّ نظر رکھتے ہوئے جدیداورخوبصورت انداز میں تعمیر کی گئی ہے ۔اس کے ہال میں17،برآمدے میں5 اور صحن میں22 صفیں ہیں ۔ہال کی ایک صف میں60،جبکہ برآمدے اور صحن کی ہر ہرصف میں 85نمازیوں کی گنجائش ہے اور یوں پوری مسجد میں بیک وقت3000 سے زائد افراد اللہ کے حضور سجدہ ریز ہوسکیں گے ۔

مسجد کے ہال اور برآمدے کے نیچے ایک وسیع تہ خانہ بھی بنایا گیا ہے اوراسی تہ خانےمیں تحفیظ القرآن کاشعبہ قائم ہے،جہاں مستقبل مىں انشاء اللہ حفظ کی تقریباً 12کلاسیں لگائی جائیں گی۔صحن کے تین اطراف میں ایک گیلری بنائی گئی ہےاور اس گیلری کے اوپر ہی تینوں اطراف (شمال ،جنوب،اور مشرق )میں شعبۂ لینگویج اوردرسِ نظامی کی 14درسگاہیں ہیں۔اس سے جہاں طلبہ کو ہر وقت مسجد کے مبارک ماحول میں رہنے کا موقع ملے گا، وہیں مسجد بھى تقرىباً چوبىس گھنٹے آباد رہے گى۔ اس كے علاوہ مسجد كے شمال مشرق اور جنوب مشرق كى جانب دوبڑے ہال بنائے گئے ہیں ، جس مىں سے اىك طرف دو منزلہ (تہ خانہ، زمىنى منزل) لائبرىرى جبكہ دوسرى طرف طلبہ كےلىے کمپیو ٹر لیب بنائی گئی ہے۔

کتب خانہ:

لائبرىرى كسى بھى تعلىمى ادارے كے علمى ذوق اور كتاب دوستى كى پہچان ہوتى ہے، ىہ وہ گھاٹ ہوتا ہے جہاں تشنگانِ علم اپنى پىاس بجھانے كے لىے ہر وقت رجوع كرتے ہىں۔

جامعہ کی لائبرىرى مىں عربى ، اردو اور انگلش مىں مختلف مضامىن مثلاً تفسىر، حدىث، فقہ، عقائد، ادب، بلاغت، مواعظات، سوانح اور بالخصوص عربى ادب كى كثىر كتب طلبہ و اساتذہ كى علمى پىاس بجھانے كے لىے مہیاکی گئی ہیں ۔

(یہاں چھ مسابقوں کی تفصیل ذکرکریں تومناسب ہوگا)
طلبہ كے علمى ذوق مىں نكھار و پختگى اور تصنىفى مىدان مىں مہارت پىدا كرنے كے لىے ان سے اساتذۂ كرام كى نگرانى مىں عربى ، اردو اورانگلش مىں مضامىن لكھوائے جاتے ہىں، جس كے لىے مختلف معاون كتب لائبرىرى سے جارى كى جاتى ہىں۔

دلکش دارلاقامہ:

جامعہ بیت السلام میں مشرقی جانب ایک خوبصورت اور جدىد سہولتوں سے مزیّن پانچ منزلہ دارالاقامہ(ہوسٹل) تعمیر کیا گیا ہے۔اس عمارت مىں کل72 کمرے ہیں ،ہر کمرے میں دو منزلہ مسہری كے سات آٹھ طلبہ کی رہائش کا انتظام ہے ۔دار الاقامہ کی پانچویں منزل پر ایک کنوپی شکل کا وسىع کھانے کا ہال بنایا گیا ہے جس میں00 6 سے زائد طلباكے لىے بیک وقت کھانا کھانے کی گنجائش ہے۔

مطبخ:

انسانی جسم کو صحت مندرہنے اور مکمل استعداد کے ساتھ کام کرنے کے لیے حفظانِ صحت کے اصولوں کے مطابق غذا کی ضرورت ہوتی ہے ۔یہ بات مسلّم ہے کہ اچھی خوراک صحت مند جسم کی ضامن ہے اور تندرست جسم زرخیز دماغ کے لیے ضروری ہے ۔

جامعہ کی شروع ہی سے یہ خواہش اور کوشش رہی ہے کہ طلبہ کو ہروقت متوازن غذائیں فراہم کی جائیں،تاکہ ان کو اپنے کھانے کا انتظام خود کرنے کی فکر نہ رہے اور وہ مکمل یکسوئی کے ساتھ ہمہ وقت طلبِ علم میں مصروف رہیں ۔

اس مقصد کے پیشِ نظر جامعہ بیت السلام میں شعبۂ مطبخ کا قیام عمل میں لایا گیا ہے ۔جامعہ کا مطبخ دارالاقامہ کی چھت پر بنایا گیا ہے جوکہ الحمد للہ !کھانے پکانے کے جدید آلات سے آراستہ ہے ۔فی الحال اس مطبخ میں تین ریفریجریٹر،ایک قیمہ بنانے کی مشین ،ایک سبزی کاٹنے کی مشین ،ایک ٹھنڈے پانی کی مشین ،ایک فوڈ فیکٹری ،چار لوہے کے چولہےآٹھ اسٹیل کے بڑے چولہے ،دو اسٹیل کے چھوٹے چولہے ،آٹاگوندھنے کی مشین اوردو تندوراورایک روٹی پکانے کاپلانٹ موجود ہے ۔ کھانا پکانے کی جگہ سے متصل ہی ایک بڑا کمرہ راشن اور مطبخ کا دیگر سامان رکھنے کے لیے اور ایک چھوٹا کمرہ بطورِ دفتر برائے نگرانِ مطبخ تعمیر کیا گیا ہے ۔اسی طرح برتن دھونے اور طلبہ کے لیے ہاتھ وغیرہ دھونے کا انتظام بھی وہیں کیا گیا ہے ۔راشن ،سبزی اور گوشت وغیرہ اوپر پہنچانے کے لیے لفٹ لگادی گئی ہے،سالن پکانے کانظم اسی مطبخ میں ہے ،جبکہ روٹی پکانے کی مشین اور دو تندور نیچے جدید مطبخ میں منتقل کردیئے گئے ہیں ،مطبخ کا عملہ کل9 افراد پر مشتمل ہے ۔

مطعم:

جامعہ کا مطعم ،مطبخ کے ساتھ ہی واقع ہے ۔مطبخ میں کھانا پکایا جا تا ہے اور مطعم میں طلبہ بیٹھ کر کھانا کھاتے ہیں ۔جامعہ کا مطعم دو وسیع ہالوں پر مشتمل ہے ،جن میں سے ایک شرقاً غرباً اور ایک شمالاً جنوباً تعمیر کیا گیا ہے ۔اس مطعم میں زمین کی سطح سے تقریباً 5انچ اونچا ایک پائیدار دسترخوان بنایا گیا ہے، جس پر سرخ رنگ کا ماربل نصب کیا گیا ہے ۔طلبہ ایک طے شدہ نظم کے مطابق استاذ کی نگرانی میں وہاں کھانا کھاتے ہیں اور صفائی بھی خود ہی کرتے ہیں ۔اس مطعم میں تقریباً 600سے زائد طلبہ کے بیٹھنے کی گنجائش ہے۔

کھانے کا نظم:

جامعہ میں الحمدللہ! طلبہ کو صحت بخش اور متوازن غذا دینے کی بھر پور کوشش کی جاتی ہے ۔دال ، سبزی، گوشت اور چاول ایک مرتّب نظام کے تحت پکائے جاتے ہیں ۔روٹی تندور پر بنائی جاتی ہے اور طلبہ کو حسبِ ضرورت و خواہش روٹیاں کھانے کی اجاز ت ہے ،اس کی کوئی مقدار متعین نہیں ہے ۔طلبہ میں کھانا بہت نظم وضبط کے ساتھ تقسیم کیا جاتا ہے ۔ہر درسگاہ کے طلبہ باری باری خدمت کرتے ہیں ،چنانچہ کچھ طلبہ روٹی،کچھ سالن اور کچھ طلبہ پانی تقسیم کرتے ہیں ۔اس طرح ہر طالب علم کو خود اٹھنے کی ضرورت نہیں پڑتی ،بلکہ اس کو یہ تمام چیزیں اپنی جگہ پر بیٹھے بیٹھے مل جاتی ہیں ۔اسی طرح بیمار طلبہ کے لیےپرہیزی کھانا تیار کرنے کا انتظام ہے اور انہیں حسبِ ضرورت دودھ، دلیہ ،بسکٹ اور پھل فراہم کیے جاتے ہیں ۔

عملے کی تربیت:

جامعہ کے مطبخ میں کام کرنے والےعملے کی تربیت کا بھی اہتمام کیا جاتا ہے ۔عملے پر نگرانِ مطبخ (جو کہ ماشاء اللہ! عالم دین ہیں )سے قرآنِ پاک پڑھنا اور بنیادی مسائل کی تعلیم حاصل کرنا لازم ہے ۔ اسی طرح وقتاً فوقتاً اساتذۂ کرام ان میں اصلاحی بیانات فرماتے ہیں ،جن میں طلبہ کے ساتھ شفقت اور نرمی ،آپس میں محبت کے ساتھ رہنے اور کام کے دوران ذکر میں مشغول رہنے کی ترغیب بطورِ خاص دی جاتی ہے۔

کھیل کا گراؤنڈ:

طلبہ کے کھیل کے لیے دو ایکڑ پر محیط ایک گراسی گراؤنڈ بھی ہے جس میں طلبہ شام کو فٹبال کھیلتے ہیں ،جبکہ صبح فجر کے بعد تمام طلبہ پر لازم ہے کہ وہ کھیل کے گراؤنڈ کے گرد تین چکر دوڑیں ۔یہ تین چکر ان کے پورے دن كے لىے نشاط كا باعث ہوتے ہیں ،جس كے بعد بچے پورا دن ہشاش بشاش اور چست رہتے ہیں ۔

رفاہی خدمات:

جامعہ بیت السلام کی سرگرمیاں صرف تعلىم و تربىت كى حد تك محدود نہىں ہىں، بلکہ خیر اور بھلائی کے اس پھوٹتے چشمے سے آس پاس کا علاقہ مادى لحاظ سے بھی خوب سیراب ہورہا ہے ۔

چونکہ جامعہ کے قرب وجوار کا علاقہ دینی اور دنیوی ہر دو اعتبار سے پسماندگى كا شكار اور قابلِ توجہ ہے ،اس لیے جامعہ کی انتظامیہ جہاں ان کے دین کے بارے میں فکر کرتی ہے ،وہیں ان کی دنیوی ضروریات کو بھی مدِّ نظر رکھا جاتا ہے، چنانچہ رمضان المبارک میں قرب و جوار كے اكثر گوٹھوں کے روزہ داروں كے لىے افطاری کا انتظام کرنا ، مستحقینِ زکوۃ تک زکوۃ کی مدّ میں لباس پوشاک،اشیائے خورد ونوش ،راشن وغیرہ پہنچانا،عید الاضحیٰ کے موقع پر ’’اجتماعی قربانی‘‘ کرکے تمام گوشت قرب وجوار کے علاقہ میں تقسیم کرنا ۔۔۔ایسے امور ہیں جو بفضلہٖ تعالیٰ جامعہ گزشتہ کئی سالوں سے بحسن وخوبی سرانجام دے رہا ہے ،جس کی تفصیلی کارگزاریاں وقتاً فوقتاً’’ماہنامہ فہمِ دین ‘‘میں شائع ہوتی رہتی ہیں۔

بیت السلام اسپتال:

جامعہ بیت السلام کے احاطہ میں’’بیت السلام ویلفئیر ٹرسٹ‘‘ کی زیرِ نگرانی ’’بیت السلام اسپتال ‘‘ کی تعمیرکا کام تکمیل کے آخری مراحل میں ہے ،جس کا رقبہ 300گز ہے ۔اس میں انشاء اللہ مرىض مردوں اور خواتین کے لیے چیک اَپ کا الگ الگ انتظام ہوگا ۔فوری طبّی امداد کی سہولت24 گھنٹے دستىاب ہوگى۔اس میں ہفتہ کے مقرر ہ دنوں میں مختلف امراض کے اسپیشلسٹ ڈاکٹرحضرات کی خد مات میسر ہوں گی اور ۔اس اسپتال کے قیام سے جامعہ کے اساتذہ ، طلبہ اورعملہ کے علاوہ قرب وجوار کے بے شمار گوٹھوں کے لوگوں کو نہ صرف یہ کہ مفت علاج کی سہولت میسر آئے گی ،بلکہ ان کی دینی اور روحانی تربیت کا بھی اہتمام کیا جائے گا اور یوں لوگ وہاں سے جسمانی اور روحانی دونوں اعتبار سے صحت یاب ہوکر لوٹیں گے۔