|September 23, 2019
NEWS
تعمیر بیت ہمیں سلام ہسپتال تکمیل کے آخری مراحل میں ہے
حدیث حفظ مقابلہ جلد ہی آنے والے
جلد ہی طالب علم رائے ویک میں شرکت کرنے والے ہىں

شعبۂ درسِ نظامی

اس شعبے مىں عالم كا كورس كراىا جاتا ہے، جس كا كل دورانىہ 8 سال ہے۔ درسِ نظامی میں تفسیر،اصولِ تفسیر،حدیث،اصولِ حدیث،فقہ ،اصولِ فقہ،عربی گرامر (صرف ونحو)منطق اور عربی ادب وغىرہ پڑھائے جاتے ہىں،جس کے بعد طلبہ میں اتنی استعداد پیدا ہوجاتی ہے کہ وہ قرآن مجید اور احادیثِ مبارکہ کو خود سمجھ سکیں اور
علمِ الٰہی کے بحرِ بیکراں سے اپنے اپنے ظرف کے مطابق علم ومعرفت کے موتی نکال سکیں ۔

جامعہ میں اب تک اس شعبے میں ابتدائی درجات(متوسطہ سوم،اولیٰ ،ثانیہ،ثالثہ،رابعہ خامسہ اور سادسہ ) کی تعلیم دی جارہی ہے ،جن میں تقریباً 85 2طلبہ زیرِ تعلیم ہیں ،اس سلسلے كو آگے انشاء اللہ درجہ ٔ سابعہ تك بڑھانے کا ارادہ ہے۔اس کے بعد جامعہ كے طلبہ كو اکابرىن كى خدمت مىں بقىہ تعلىم كے لىے بھىجا جائے گا، تاكہ طلبہ ان كے سامنے زانوئے تلمذ تہ كركے اعلى تعلیم کے ساتھ ساتھ فیوض وبرکات اور بہترىن تربىت سے بھى بہرہ ور ہوں ۔

جامعہ مىں طلبہ(خاص كر اولىٰ اور اس سے اعلىٰ درجات كے طلبہ ) پر عربی زبان مىں تکلّم (بول چال ) کااہتمام کرنا لازم ہے ،یہ اصول ان کے تعلیمی فرائض میں شامل ہے۔جس کی خلاف ورزی کرنے والے کو مناسب تنبیہ کی جاتی ہے۔اس كے علاوہ طلبہ میں عربی زبان کا ذوق پروان چڑھانے کے لیے وقتاً فوقتاً عرب علما کو مدعو کیا جاتا ہے جو اپنے قیمتی محاضرات سے انہیں مستفید فرماتے رہتےہیں ۔

جامعہ کی انتظامیہ کی یہ خواہش ہے کہ تعلیمی درجات خواہ کم ہی ہو ں،لیکن ان پر توجہ بھرپورہو،تاکہ پڑھائی کا معیار زیادہ سے زیادہ بہترہوسکے۔یہی وجہ ہے کہ سہ ماہی ،ششماہی اور سالانہ امتحانات میں جہاں ہر کتاب کا تحریری امتحان ہوتا ہے،وہاں ہر درجے كى اہم کتب(مثلاً صرف ،نحو،فقہ وغیرہ) کا تقریری امتحان بھی لیا جاتا ہے اور اس کے لیے شہر کے بڑے مدارس کے تجربہ کار اور ماہرینِ فن اساتذہ کو مدعو کیا جاتا ہےجو تشریف لاکر طلبہ کا

تقریری امتحان لینے کے بعد جامعہ کے اساتذہ كو اپنے تدریسی تجربات کی روشنی میں قیمتی تجاویز اور مفىد آراء سے مستفید فرماتے ہیں۔