|October 21, 2019
NEWS
تعمیر بیت ہمیں سلام ہسپتال تکمیل کے آخری مراحل میں ہے
حدیث حفظ مقابلہ جلد ہی آنے والے
جلد ہی طالب علم رائے ویک میں شرکت کرنے والے ہىں

ہمارے بارے میں

تعارف نامہ:

’’جامعہ بیت السلام ‘‘ دینی اور عصری علوم كا حامل ایک ایسا ادارہ ہے جہاں تعلىم كے ساتھ ساتھ تربىت كا بھى پورا اہتمام كىا جاتا ہے۔ ىہ كراچى كے علاقے گلشنِ حدىد كے پہلو مىں واقع لنك روڈ كے قرىب شہرى آلودگىوں سے دور پر فضا اور پر سكون مقام پر واقع ہے۔ اسكا كل رقبہ تقرىباً 17 اىكڑ ہے۔ دىنى مدارس مىں ىہ وہ منفرد ادارہ ہے جس كے دن كا آغاز فجر سے كہىں پہلے ہوجاتا ہے، جہاں تہجد كے وقت سے ہى معمولات كى كلىاں چٹكنے لگتى ہىں، جہاں داخل ہونے كے بعد آپ كو فضا مىں پھىلى عربى زبان كى بھىنى بھىنى خوشبو نہال كردے گى۔

ہمارا مقصد:

روشن مستقبل کا تابندہ ستارہ

جامعہ بیت السلام۱۴۳۶ھ

معیاری تعلیم اعلی تربیت کے ساتھ

خدمات اہداف مقاصد

تاریخ کے جھروکے میں:

جامعہ بیت السّلام نے اپنے علمی سفر کا آغاز15شعبان المعظم1430ھ بمطابق میں کیا ۔اس سے قبل یہاں پر’’تعلیم الاسلام‘‘ کے نام سے ایک مدرسہ آدھے ایکڑ کے رقبہ پر قائم تھا،جو چھ کمروں اور ایک خوبصورت مسجدپر مشتمل تھا، جس میں حفظ وناظرہ کی دودرسگاہیں مصروفِ عمل تھیں ۔اس قدىم مدرسے کے متولّی ہمارے کرم فرما جناب حاجی شبیر احمد لطیف اور ان کے مقامی معاون ودستِ راست حاجی دوست علی صاحب تھے ۔انہوں نےجامع مسجد بیت السّلام ڈیفنس کے امام صاحب سے اس مدرسے کو اپنی سرپرستی میں لینے کی درخواست کی ،ان کے بار بار اصرار پر یہاں مزید زمین قیمتاًخرید کر بڑے پیمانے پر تعلىمى اور تعمىرى کام شروع کیا گیا اور اللہ کے فضل وکرم سے چھ سال کی مختصر سی مدّت میں جامعہ مىں طلبہ كى تعداد470 ہوگئى ہے، شعبۂ حفظ كى درسگاہوں كى تعداد مىں اضافہ كے ساتھ ساتھ درسِ نظامى ، شعبۂ لىنگوىج اور مىٹرك كا آغاز ہوا، جس میں اساتذہ كى تعداد 39تك پہنچى ،اس کے ساتھ ساتھ اىك پانچ منزلہ جدىد سہولىات سے آراستہ خوبصورت دار الاقامہ،ایک وسیع وعریض شاندار مسجد،ایک معیاری اسپتال اوراساتذہ کرام کی رہائش گاہیں (جوکہ دوپانچ
منزلہ عمارتوں پرمشتمل ہےہرعمارت میں 20فلیٹ ہیں ) مکمل ہو چکی ہے ۔

اغراض ومقاصد:

عام مسلمانوں میں علومِ دینیہ (قرآن ،حدیث،عقائد ،فقہ وغیرہ) کی ترویج واشاعت کرنا،عصری تقاضوں کو ملحوظ رکھتے ہوئے محققانہ بصیرت کے حامل ماہرینِ علومِ دینیہ پیدا کرنا اوراسلامی معاشرے کو درست نہج پر تربیت سے آراستہ اور اخلاقِ نبوی ﷺ سے پیراستہ ماحول فراہم کرناہے۔